عمومی مضامین˛Mixed essay

نچھتر، منازل . نچھتر کیسے معلوم کریں؟

Posted On مارچ 5, 2020 at 6:50 صبح by / No Comments

نچھتر، منازل
نچھتر کیسے معلوم کریں؟

منطقہ البروج یا دائرۃ البروج کو بنیادی طور پر بارہ (12) حصوں میں تقسیم کیا جاتا ہے۔ ہندی یا نریانہ یا ویدک سسٹم میں اس کو راس کے نام سے پکارا جاتا ہے جب کہ یونانی یاسیانہ نجوم میں ان کو برج کے نام سے پکارا جاتا ہے اور ہر حصہ منزل کہلاتا ہے۔
منطقۃ البروج یا دائرۃ البروج کی بارہ حصوں میں تقسیم کے علاوہ اس کو ہندی نجوم میں 27 حصوں میں تقسیم کیا جاتا ہے۔ ہر حصہ نچھتر کہلاتا ہے۔ جب کہ یونانی نجوم میں دائرۃ البروج کو 28 حصوں میں تقسیم کیا جاتا ہے۔
ہندی نجوم میں عمومی طور پر 27 ستائیس نچھتروں کا ذکر کیا جاتا ہے تاہم ان میں بھی ان کی کل تعداد 27 ستائیس نچھتروں یا 28 اٹھائیس نچھتروں کے بارے میں بھی بحث ہے۔ تاہم موضوع کی طرف واپس آتے ہوئے ہندی نجوم میں 27 ستائیس نچھتروں کے نام ذیل میں بیا ن کیے جا رہے ہیں۔
اشنی ، بھرنی، کرتکا، روہنی، مرکشرا، آردرا، پزبس، پکھ، اشلیکھا، مگھا، پورہاپھانکنی، اتراپھانکنی، ہست، چترا، سواتی، بساکھ ، انورادھا، جیشا، مولا،نچھتر، پورباکھاڑ، اتراکھاڑ، شرون، دھنشتا، ست بکھا، پوریابھا، اتریابھا، ریوتی۔
جہاں تک منازل قمر کا معاملہ ہے ان کا بیان فی زمانہ آپ کو بہت سی جنتریوں بشمول خالد روحانی جنتری کے مل جائے گا۔ تاہم فی زمانہ ہندی حساب سے نچھتروں کا بیان صرف پاکستان میں شائع ہونے والی خالد ہندی جنتری میں ہی ملے گا۔ انڈیا سے آنے والی جنتریوں کا ہندی حساب بشمول نچھتروں کے لیے پاکستان میں بلا کسی درستگی اور اصلاح کے استعمال ہوتا ہے۔ یہ جنتریاں انڈیا کےوقت کے حساب سے ہوتی ہیں سو ان میں دیئے گئے حسابات پاکستان کے لیے بلا تبدیلی یعنی درستگی کے استعمال نہیں کیے جا سکتے۔ پاکستان کے وقت اور انڈیا کے وقت میں فرق ہے اس لیے انڈیا سے آئی ہوئی جنتری کے حسابات پاکستان کی حد تک استعمال کرنا غلط ہے۔ وہ منجم حصرات جو انڈیا کی جنتری کو پاکستان میں استعمال کرنا چاہتے ہیں ان کو اس میں ضروری درستگی اور ترمیم استعمال سے پہلے کرنی چاہئے۔
تاہم اگر آپ اس مشکل سے بچنا چاہتے ہیں تو خالد ہندی جنتری استعمال کریں اس جنتری میں دیئے گئے تمام حسابات ہندی یا نریانہ بنیاد پر اخذ کیے جاتے ہیں لیکن تمام اوقات کار خالد ہندی جنتری میں پاکستان کے معیاری وقت کےمطابق ہوتے ہیں سو آپ خالد ہندی جنتری کو کسی قسم کی ترمیم اور اصلاح کے بغیر پاکستان میں استعمال کر سکتے ہیں۔
آپ کسی بھی نچھتر کے بارے میں جاننا چاہیں تو خالد ہندی جنتری متعلقہ سال کی لے لیں اس میں آپ کو سال بھر واقع ہونے والے نچھتروں کی مکمل تفصیل مل جائے گی۔ خالد ہندی جنتری 2020ء کا ماہِ جنوری کا ایک صفحہ ذیل میں دیا جا رہا ہے جس میں ماہِ جنوری میں واقع ہونے والے تمام نچھتروں کی تفصیل درج ہے۔ باقی سال کے نچھتروں کی تفصیل جاننے کے لیے آپ متعلقہ سال کی خالد ہندی جنتری حاصل کریں۔ وہ احباب جو جنتر منتر یا نچھتروں کے لحاظ سے کام کرتے ہیں وہ خالد ہندی جنتری سے اس بارے مکمل معلومات ، درستگی کے ساتھ حاصل کر سکتے ہیں۔

 

ویدک نجوم، ہندی نچھتر˛ ہندی نجوم اور نچھتر˛Nakshatra˛  lunar mansion
ویدک نجوم، ہندی نچھتر˛ ہندی نجوم اور نچھتر˛Nakshatra˛ lunar mansion

سطورِ ذیل میں ایک ٹیبل دیا جارہا ہے جس میں نچھتروں کے اُردو ناموں بل ترتیب دیا گیا ہے؛

# اردونام نچھتروں کے
1 اشنی
2 بھرنی
3 کرتکا
4 روہنی
5 مرکشرا
6 آدرا
7 پزبس
8 پیوشا
9 اشلیشا
10 مگھا
11 پورہاپھالگنی
12 اتراپھالگنی
13 ہاستہ
14 چترا
15 ساتی
16 وساکھ
17 انورادھا
18 جیشتھا
19 مولا
20 پروااشودھا
21 اشودھا
22 سراوانا
23 دھانشتا
24 شتابھشا
25 پروابھادراپدا
26 اترابھادھرپدا
27 ریواتی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے