عمومی مضامین˛Mixed essay

عمل تصرف – ظالموں کواُن کے انجام تک پہنچانے ‘ اُن میں تفرقہ پیدا کرنے‘ باہم دشمنی اور اختلاف پیدا کرنے اور سزا دینے کے لیے ایک بے مثل عمل۔

Posted On مارچ 8, 2020 at 7:59 شام by / No Comments

عمل تصرف

ظالموں کواُن کے انجام تک پہنچانے ‘ اُن میں تفرقہ پیدا کرنے‘ باہم دشمنی اور اختلاف پیدا کرنے اور سزا دینے کے لیے ایک بے مثل عمل۔

تحریر: خالد اسحاق راٹھور۔

عمل تصرف ظالموں کواُن کے انجام تک پہنچانے ‘ اُن میں تفرقہ پیدا کرنے‘ باہم دشمنی اور اختلاف پیدا کرنے اور سزا دینے کے لیے ایک بے مثل عمل۔

٭٭٭٭٭
عمل تصرف
ظالموں کواُن کے انجام تک پہنچانے ‘ اُن میں تفرقہ پیدا کرنے‘ باہم دشمنی اور اختلاف پیدا کرنے اور سزا دینے کے لیے ایک بے مثل عمل۔

تحریر: خالد اسحاق راٹھور۔
دنیا عملیات میں کئی ایک حقیقی اعمال ایسے ہیں جو اس شعبہ سے تعلق رکھنے والے کسی بھی دوسرے فرد کو منتقل کرنے پر یقین نہیں رکھتے۔ بلکہ چھوٹی چھوٹی باتوں اور اُصول و قواعد کو بھی عام لوگوں اور اس شعبے سے متعلق دوسرے افراد سے پوشیدہ رکھنے کی بھرپور سعی کی جاتی ہے۔ تاہم ’’راہنمائے عملیات‘‘ کے اجراء کے پہلے دن سے ہی میری خواہش یہی رہی ہے کہ ہر فرد کے لیے اس علم کو عام کر دیا جائے اور جو بھی مرد و زن اس شعبے میں کام کرے اس کو سیر حاصل معلومات اور حقیقی علم منتقل کیا جائے۔ اس حوالے سے ادارہ جہاں کئی ایک خدمات علوم مخفی کے ماہرین کے لیے انجام دے رہا ہے وہاں زیر بحث موضوع یعنی ’’تصّرفات‘‘ پر زیر نظر مضمون آپ کے لیے ایک نایاب علمی تحفہ ثابت ہو گا۔
عمل حروف تصّرف
میدان عملیات میں حروف تصّرف بنیادی طور پر اختلاف‘ تفرقہ‘ باہم لڑائی جھگڑا‘ دوستوں‘ رشتہ داروں میں اختلاف‘ گھر والوں میں تفرقہ‘ کاروباری رقیبوں کو تباہ کرنے ‘ میاں بیوی میں فساد پیدا کرنے اور ایسے ہی لاتعداد اور دیگر کاموں کے لیے مجرب اہمیت رکھتے ہیں۔ تاہم یہ بات یاد رکھیں کہ عمل بذات خود غلط نہیں ہوتا اس کا استعمال درست یا غلط ہو سکتا ہے۔حروف تصّرف کی اس آتشی اور فسادی طاقت کو آپ تعمیری طریقے سے استعمال کرتے ہوئے ظالموں کو زیر کرنے‘اِن میں باہم اختلاف پیدا کرنے تاکہ وہ دوسروں کو اکٹھے ہو کر جو زیادہ سے زیادہ نقصان پہنچاتے ہیں اس سے نجات مل سکے اور ایسے ہی دیگر تعمیری کاموں کے لیے بھی استعمال کر سکتے ہیں۔
دیکھیں اِن حروف کی بنیادی طاقت تو تفرقہ سے منسوب ہے لیکن یہ اِن کے حروف کے عامل پر منحصر ہے کہ وہ اِس طاقت کا استعمال منفی طریقے سے کرتا ہے یا مثبت طریقے سے؟ جائز جگہ کرتا ہے یا ناجائز جگہ؟ آپ نے اپنے اعمال کا حساب خود دینا ہے سو خود سوچ سمجھ کر کریں !!
حروف تصّرف
درج ذیل حروف تصرف ہیں جو ہمارے عمل میں ریڑھ کی ہڈی کا کام دیں گے۔
’’ب۔ ج۔ ہ۔ و۔ ز۔ط۔ی۔ل۔ع۔ن۔ص‘‘
طریق عمل
٭پہلی سطر میں اُن تمام افراد کے نام بمعہ والدہ تحریر کرلیں جن کے مابین عمل کرنا چاہتے ہیں۔
٭دوسری سطر میں ’’حروف تصرف‘‘ تحریر کر لیں۔
٭تیسری سطر میں مندرجہ بالا دونوں سطروں کو باہم امتزاج دے دیں۔
٭پھر اس سطر کی تکسیر حرفی کر یں۔
٭تکسیر حرفی کے کل اعداد جمع کر لیںاور چاروںچالوں سے نقش تحریر کریں۔ یہ نقش کالی سیاہی سے تحریر ہوں گے۔
٭حاصلہ تکسیر کو بھی کالی سیاہی سے تحریر کر لیں۔
٭مضمون کے ہمراہ دی گئی حرف تصرف کی تکسیر کو بھی الگ سے کالی سیاہی سے تحریر کر لیں۔
٭دوران عمل کالی مرچ‘ رال اور دیگر بدبودار بخور استعمال کریں۔
٭عمل کے لیے کسی بھی کوکب کے ہبوط یا کواکب کی نحس نظرات اور نحس ساعت کا انتخاب بمطابق مقصد کرنا ضروری ہے۔

عمل بمعہ مثال
بطور مثال صرف ایک فرد کا نام لیا گیا ہے۔ کیونکہ زیادہ افراد کے ناموں سے مثال بہت طویل ہو جاتی اور بلاوجہ مضمون طوالت اختیارکر جاتا۔
نام: افضل حمید بن حمیدہ بیگم
حروف تصرف: ب۔ج۔ہ۔و۔ز۔ط۔ل۔ع۔ن۔ص۔
اول
ا ح ب ف م ج ض ی ہ ل د و ح ہ ز م ب ط ی ی ی د گ ل م ع ن ص
ا ص ح ن ب ع ف م م ل ج گ ض د ی ی ہ ی ل ی د ط و ب ح م ہ ز
ا ز ص ہ ح م ن ح ب ب ع و ف ط م د م ی ل ل ج ی گ ہ ض ی د ی
ا ی ز د ص ی ہ ض ح ہ م گ ن ی ح ج ب ل ب ل ع ی و م ف د ط م
ا م ی ط ز د د ف ص م ی و ہ ی ض ع ح ل ہ ب م ل گ ب ن ج ی ح
ا ح م ی ی ج ط ن ز ب د گ د ل ف م ص ب م ہ ی ل و ح ہ ع ی ض
ا ض ح ی م ع ی ہ ی ح ج و ط ل ن ی ز ہ ب م د ب گ ص د م ل ف
ا ف ض ل ح م ی د م ص ع گ ی ب ہ د ی م ح ب ج ہ و ز ط ی ل ن
ا ن ف ل ض ی ل ط ح ز م و ی ہ د ج م ب ص ح ع م گ ی ی د ب ہ
ا ہ ن ب ف د ل ی ض ی ی گ ل م ط ع ح ح ز ص م ب و م ی ج ہ د
ا د ہ ہ ن ج ب ی ف م د و ل ب ی م ض ص ی ز ی ح گ ح ل ع م ط
ا ط د م ہ ع ہ ل ن ح ج گ ب ح ی ی ف ز م ی د ص و ض ل م ب ی
ا ی ط ب د م م ل ہ ض ع و ہ ص ل د ن ی ح م ج ز گ ف ب ی ح ی
ا ی ی ح ط ی ب ب د ف م گ م ز ل ج ہ م ض ح ع ی و ن ہ د ص ل
ا ل ی ص ی د ح ہ ط ن ی و ب ی ب ع د ح ف ض م م گ ہ م ج ز ل
ا ل ل ز ی ج ص م ی ہ د گ ح م ہ م ط ض ن ف ی ح و د ب ع ی ب
ا ب ل ی ل ع ز ب ی د ج و ص ح م ی ی ف ہ ن د ض گ ط ح م م ہ
ا ہ ب م ل م ی ح ل ط ع گ ز ض ب د ی ن د ہ ج ف و ی ص ی ح م
ا م ہ ح ب ی م ص ل ی م و ی ف ح ج ل ہ ط د ع ن گ ی ز د ض ب
ا ب م ض ہ د ح ز ب ی ی گ م ن ص ع ل د ی ط م ہ و ل ی ج ف ح
ا ح ب ف م ج ض ی ہ ل د و ح ہ ز م ب ط ی ی ی د گ ل م ع ن ص

بمطابق قاعدہ اس تکسیر کو ہدایت کردہ اوقات میں کالی سیاہی سے تحریر کر لیں اور کسی ویران جگہ‘ کھنڈر یا ایسے ہی میدان میں دفن کر دیں جہاں کوئی سایہ نہ ہو اور جب سورج نکلے تو جس جگہ یہ تکسیر دفن ہے اس جگہ براہ راست سورج کی شعاعیں پڑیں۔
عمل کے اگلے مرحلے میں اس تکسیر کے کل اعداد استخراج کر لیں جو کہ اس مثالی تکسیر کے ۲۷۸۸۰ ہیں۔ ان اعداد کی بنیادپر چاروں چالوں سے چار نقوش بنائیں اور ہدایت کردہ طریقہ کار اور وقت پر کاغذ پر تحریر کر لیں۔ ذیل میں مثالی عمل کے چاروں نقوش بمعہ چاروں چالوں کے تحریر ہیں:-

                                                                   چال آتشی                                            نقش

۱ ۱۴ ۱۱ ۸ ۶۹۶۲ ۶۹۷۶ ۶۹۷۳ ۶۹۶۹
۱۲ ۷ ۲ ۱۳ ۶۹۷۴ ۶۹۶۸ ۶۹۶۳ ۶۹۷۵
۶ ۹ ۱۶ ۳ ۶۹۶۷ ۶۹۷۱ ۶۹۷۸ ۶۹۶۴
۱۵ ۴ ۵ ۱۰ ۶۹۷۷ ۶۹۶۵ ۶۹۶۶ ۶۹۷۲

                چال بادی                            نقش

۱۴ ۱ ۸ ۱۱ ۶۹۷۶ ۶۹۶۲ ۶۹۶۹ ۶۹۷۳
۷ ۱۲ ۱۳ ۲ ۶۹۶۸ ۶۹۷۴ ۶۹۷۵ ۶۹۶۳
۹ ۶ ۳ ۱۶ ۶۹۷۱ ۶۹۶۷ ۶۹۶۴ ۶۹۷۸
۴ ۱۵ ۱۰ ۵ ۶۹۶۵ ۶۹۷۷ ۶۹۷۲ ۶۹۶۶

                چال آبی                             نقش

۱۱ ۸ ۱ ۱۴ ۶۹۷۳ ۶۹۶۹ ۶۹۶۲ ۶۹۶۷
۲ ۱۳ ۱۲ ۷ ۶۹۶۳ ۶۹۷۵ ۶۹۷۴ ۶۹۶۸
۱۶ ۳ ۶ ۹ ۶۹۷۸ ۶۹۶۴ ۶۹۶۷ ۶۹۷۱
۵ ۱۰ ۱۵ ۴ ۶۹۶۶ ۶۹۷۲ ۶۹۷۷ ۶۹۶۵

                چال خاکی                            نقش

۸ ۱۱ ۱۴ ۱ ۶۹۶۹ ۶۹۷۳ ۶۹۷۶ ۶۹۶۲
۱۳ ۲ ۷ ۱۲ ۶۹۷۵ ۶۹۶۳ ۶۹۶۸ ۶۹۷۴
۳ ۱۶ ۹ ۶ ۶۹۶۴ ۶۹۷۸ ۶۹۷۱ ۶۹۶۷
۱۰ ۵ ۴ ۱۵ ۶۹۷۲ ۶۹۶۶ ۶۹۶۵ ۶۹۷۷

مندرجہ ذیل نقوش کو بمطابق چال استعمال میں لانا ہے۔ آتشی چال سے تحریر کردہ تعویذ کو آگ لگا دیں۔ آبی چال والے تعویذ کو پانی میں بہا دیں۔ خاکی چال والے کو زمین میں دفن کر دیں اور بادی چال والے تعویذ کو پرزے پرزے کرکے تیز ہوا میں اُڑا دیں۔ بس یہ عمل یہاں تک مکمل ہوا۔ اس کے بعد ذیل میں دیئے گئے تکسیری حروف تصرف کو موزوں وقت میں کالی سیاہی سے تحریر کر لیں۔

دوم
ب ج ی ہ ل و ہ ز ب ط ی ی ی ل ع ن ص
ب ص ج ن ی ع ہ ل ل ی و ی ہ ی ز ط ب
ب ب ص ط ج ز ن ی ی ہ ع ی ہ و ل ی ل
ب ل ب ی ص ل ط و ج ہ ز ی ن ع ی ہ ی
ب ی ل ہ ب ی ی ع ص ن ل ی ط ز و ہ ج
ب ج ی ہ ل و ہ ز ب ط ی ی ی ل ع ن ص
بعد از تحریر پہلی تکسیر کے طرز پر اس کو بھی استعمال میں لائیں تاہم دونوں کو دفن کرنے کی جگہ ایک دوسرے سے کچھ فاصلہ پر ہو۔
٭٭٭٭٭

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے