عمومی مضامین˛Mixed essay

اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی – حصہ اول

Posted On فروری 29, 2020 at 7:13 صبح by / No Comments

اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی - حصہ اول
اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی – حصہ اول
اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی - حصہ اول
اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی – حصہ اول
اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی – حصہ اول
اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی – حصہ اول
اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی -  حصہ اول
اعمال و وظائف شیخ عبدالقادر جیلانی – حصہ اول

 

حضرت شیخ وجیہہ الدین یوسف بغدادی ؒ نے اپنی کتاب “مناقب طیب”میں لکھا ہے کہ میں نے سیدنا عبدالقادر جیلانی ؒ سے وظائف اور ان کی تاثیر کے بارے میں گفتگو کی تو آپ نے فرمایا کہ وظائف کی تاثیرات برحق ہیں لیکن ضرورت اس امر کی ہے کہ پڑھنے والے کی قوت ایمانی اعلی درجہ کی ہو۔ شرک سے مکمل طور پر اجتناب کیا جائے۔ تقدیر پر پختہ ایمان ہو۔ لطافت طبع ور رقت قلب کے ساتھ ساتھ پنجگانہ نماز کی پابندی ہو‘ تہجد کی نماز کا بھی اہتمام کیا جائے۔ اکثر باوضو رہا جائے۔ عمل شروع کرنے سے پہلے صدقہ و خیرات کرنا بھی لازمی ہے۔ پڑھنے والے کے دل میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے لئے بے پناہ ادب اور محبت ہو‘ ان کی اطاعت کا جذبہ موجزن ہو۔ اگر پڑھنے والے میں مسکین نوازی ‘ ایثار‘ صبر و ثبات‘ صداقت اور دیانت موجود ہو تو وہ رحمت حق سے اور زیادہ قریب ہو گا۔
جعفر بن سعید بغدادی برکات الاولیاء میں تحریر فرماتے ہیں کہ میں ماہ ربیع الاول(۵۴۱ھ) میں سریر آرائے مسند ارشاد تاجدار بغداد‘ محبوب سبحانی‘ قطب ربانی‘ سلطان الاولیاء غوث الثقلین سیدنا حضرت شیخ عبدالقادر جیلانی رحمتہ اللہ علیہ کی خدمت میں حاضر ہوا۔ یہ وہ وقت تھاکہ حضرت شیخ محترم اپنی ہمت اپنے استقلال اور اپنے دل کی نورانیت کے ساتھ خدمت خلق میں مشغول تھے۔ حضرت کی ذات والا کو آسمان عظمت کے ستاروں میں مہردرخشان کی حیثیت حاصل تھی۔ قطبیت کبریٰ کا مرتبہ آپ کو حاصل ہو چکا تھا۔ آپ بھٹکے ہوئے لوگوں کو راہ ہدایت پر لا رہے تھے ۔ میں نے عرض کیا” حضرت آپ مجھے ایسا عمل تلقین کیجئے جو میرے دینی اور دنیاوی مقاصد کے لیے مفید ہو” حضرت نے فرمایا”صاحبزادے !تحمل اور شدائد کا عادی ہو جا۔ توحید سے محبت کر‘ ہمیشہ پاک و طاہر رہ‘ نماز تہجد سے غافل نہ ہو‘ عبادت میں خشوع خضوع پیدا کر‘ صدقہ و خیرات میں تاخیر نہ کر عمل بالقرآن اور اتباع سنت کا خیال رکھ‘ مال حرام سے اجتناب کر ذکر الہی سے محبت کر‘ ادب رسول اللہ اور محبت رسول کا سرمایہ حاصل کر‘ صداقت و ریاضت کو سامنے رکھ‘ اس کے بعد عمل کی تاثیر تیرے لیے ہو ئی ” اس کے بعد فرمایا!
حضورﷺ کے توسل سے التجا کرو: جب تیرے دل میں التجاپیدا ہو بعد نماز مغرب دو رکعت نماز نفل پڑھ سلام کے بعد حق تبارک و تعالی کی حمد و ثنابیان کر۔ تینتیس بار اللہ اکبر پڑھ تینتیس بارالحمد اللہ پڑھ اس کے بعد رسول خدا صلی اللہ علیہ وسلم پر گیارہ بار درود شریف پڑھ پھر یہ سلام عرض کر:- السلام علیک یا رسول اللہ‘ السلام علیک یا خیر خلق اللہ‘ السلام علیک یا شفیع المذنبین۔پھر یہ دعا پڑھے:-
“اللھم انی اسئلک العفووالعافیتہ فی الدنیا والاخرۃ یا واجد یا ماجد لاتزل غنی نعمتہ النعمتھا علی” اس کے بعد حضور رسالت ماب صلی اللہ علیہ وسلم کے توسل سے باری تعالی کی جناب میں اپنی التجا پیش کرے۔
وسعت رزق کے لئے:
شیخ نجیب الدین بغدادی نے “تذکرہ الکرام ” میں لکھا ہے کہ شیخ عفیف الدین سے مجھے ایک خاص عمل پہنچا ہے۔ یہ عمل وسعت رزق‘ وسعت علم‘ دفع سحر‘ حفاظت حمل اور تزکیہ قلب کے لئے فائدہ بخش ہے۔
اس عمل کی ترکیب یہ ہے کہ نماز تہجد کے بعد دور رکعت نفل پڑھے ۔ پھر رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر گیارہ مرتبہ درود پڑھ کر یہ کلمات کہے جائیں:- ” اللھم انی اسئلک علماً نافعاً ورزقاً واسعاً و عملا متقبلاً وشفا من کل داع”۔
ہر مقصد کے لئے مفید عمل:
یہ پڑھنے کے بعد سر بسجدہ ہو کر اللہ تعالی کی بارگاہ میں اپنی حاجت پیش کر جائے۔ شیخ عفیف الدین اپنی کتاب”کشف الاسرار”میں تحریر فرماتے ہیں کہ” ۱۱ربیع الاول ۵۴۱ھ کو میں نے سیدنا حضرت ابو محمد محی الدین عبدالقادر جیلانی قدس سرہ سے درخواست کی کہ حضور آپ مجھے کوئی ایسا عمل بتائیں جوہرآرزو اور ہر مقصد کے لئے مفید ہے۔ آپ نے فرمایا نماز مغرب کے بعد سنتیں پڑھ کر دو رکعت نماز نفل ادا کرو‘ ہر رکعت میں الحمد کے بعد گیارہ مرتبہ قل ہو اللہ پڑھو پھر سلام کے بعد ایک سو بار یہ کلمات کہو: “سبحان اللہ وبحمدہ سبحان اللہ العظیم”اس کے بعد حضور ﷺ پر گیارہ بار درود شریف پڑھو پھر گیارہ باریہ سلام پڑھا جائے۔
السلام علیک ایھا النبی و رحمتہ اللہ برکاتہ
السلام علیک یا رسول اللہ
السلام علیک یاخیر اللہ
السلام علیک یاشفیع المذنبین
السلام علیک و علی آلک و اصحابک اجمعین
سحر کا اثر توڑنے کے لئے:
حضرت یعقوب بن اسحاق بغدادی رحمتہ اللہ علیہ نے “انوار السالکین”میں لکھا ہے کہ محبوب سبحانی سیدنا حضرت شیخ محی الدین عبدالقادر جیلانی کے ادرادو وظائف میں یہ عمل فقیر کے علم و یقین میں نہایت مجرب ہے‘ ادائیگی فرض‘ وفعت رزق اور پرہیزگاری کے لئے‘ سحر کا اثر دور کرنے کے لیے‘ برق کے طوفان سے محفوظ رہنے کے لئے ترقی علم اور دشمنون کے شر سے محفوظ رہنے کے لئے نہایت مفید ہے۔
ترکیب یہ ہے کہ بعد نماز مغرب سنتیں پڑھ کر دو رکعت نفل پڑھے ‘ بہتر یہ ہے کہ ہر رکعت میں الحمد کے بعد گیارہ گیارہ مرتبہ”قل ہو اللہ”پڑھیں۔ پھر سلام کے بعد گیارہ مرتبہ درود شریف پڑھیں پھر سربسجدہ ہو کر نہایت خشوع وخضوع کے ساتھ یہ کلمات ادا کئے جائیں۔
اللھم انت ربی وانا عبدک یاربی رحمتک والتمیس رضوانک
اللھم نجنی من عذابک وافتح لی ابواب رحمتک یا ارحم الرحمین
اس کے بعد حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے توسل سے باری تعالی کی جناب میں التجا پیش کی جائے۔ حضرت یحیی بن معاذ بغدادی ‘ شیخ وجیہہ الدین یوسف اور شیخ نجیب الدین عبدالقاہر ؒ نے اس عمل کی بہت تعریف بیان کی ہے- “بحر المعانی ” میں اس عمل کا نام ” عمل غوثیہ” لکھا ہے۔ فقیر کے نزدیک یہ عمل ہر آرزو اور ہر مقصدکے لئے مفید ہے۔ فقیر نے اس عمل کو جتنی بار پڑھا تیر بہدف پایا”۔
پریشانیوں کے عالم میں:
کسی شخص کے دریافت کرنے پر غوث اعظم نے فرمایا اگر پریشانیوںکا ہجوم ہو تو یہ طریق عمل اختیار کرو۔ پہلے سورہ فاتحہ سات مرتبہ‘پھر سورہ الم نشرح سات مرتبہ پھر سورہ اخلاص سات مرتبہ پھر درود شریف گیارہ مرتبہ پڑھو پھر سربسجدہ ہو کر یہ الفاظ کہو: یا قاضی الحاجات ویاکافی المھمات و یادافع البلیات ویاحل المشکلات ویارافع الدرجات و یاشافی الامراض ویامجیب الدعوات ویاارحم الرحمین۔ پھر یہ الفاظ کہو یا عالم ما فی الصدراخرجنی من الظلمات الی النور۔ اس کے بعد حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے توسل سے درگاہ الہی میں اپنی حاجت خشوع و خضوع کے ساتھ پیش کی جائے۔
زیارت رسولؐ کے لیے:
کسی شخص نے آپ سے دریافت کیا کہ کیا خواب میں رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی زیارت ہو سکتی ہے۔ چونکہ پوچھنے والا صالح اور دیندار شخص تھا۔ اکثر باوضو رہتا تھا۔ نماز کا پابند تھا اور تہجد کا عادی۔ اس کی عبادت میں خشوع و خضوع کی جھلک موجود تھی اور دل میں محبت رسول کا جذبہ کوٹ کوٹ کر بھرا تھا۔ غوث پاک کو اس کے ان اوصاف کا علم تھا اس لیے آپ نے اسے مشورہ دیا کہ دو شنبہ کی رات کو نماز عشاء کے بعد کامل طہارت اختیار کرو‘ نیا لباس پہنو‘ خوشبو استعمال کر‘ مدینہ منورہ کی طرف توجہ کرو اور اللہ تعالی سے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی زیارت کی التجا کرو۔ خشوع و خضوع کے ساتھ یہ درود شریف پڑھو۔
الصلوۃ والسلام علیک یا رسول اللہ‘ الصلوۃ والسلاک علیکم یا حبیب اللہ اللھم صلی علی محمد تجب و ترضاہ……. اس کے بعد سو جائو‘ انشاء اللہ تعالی رسول کریم ﷺکی زیارت نصیب ہو گی۔
آسودہ حالی کے لیے:
ایک سائل کے دریافت کرنے پر آپ نے فرمایا اگر آسودہ زندگی بسر کرنا چاہتے ہوتو فجر کے وقت سنت اور فرض کے درمیان یہ کلمات روزانہ ایک سو مرتبہ پڑھو۔ سبحان اللہ وبحمدہ‘ سبحان اللہ العلی العظیم وبحمدہ استغفر اللہ۔
خطرہ سے نجات:
عزت و حیات کے لیے کوئی خطرہ محسوس ہو تو اس صورت میں آپ نے ذیل کے کلمات سو بار پڑھنے کی ہدایت فرمائی ہے:-بسم اللہ الذی لایضر مع اسمہ شیاء فی الارض ولافی السماء وہوالسمیع العلیم۔ رزق کی زیادتی کے لئے آپ نے یہ دعا فرامائی ہے۔ اللھم اعظنی رزق کثیراً یا مجیب الدعوات ویاارحم الراحمین۔
استخارہ غوثیہ:
مفتاح الکرامات میں استخارہ غوثیہ کے نام سے ایک استخارہ درج ہے۔ شیخ نجیب الدین لکھتے ہیں۔ اگر کسی کام کے سلسلہ میں آپ صحیح طور پر نتیجہ معلوم کرنا چاہیں تو استخارہ غوثیہ پڑھیں۔اس کا طریقہ یہ ہے کہ دو رکعت نماز باجماعت ادا کریں ہر رکعت میں الحمد کے بعد گیارہ گیارہ مرتبہ قل ہو اللہ پڑھیں۔ پھر سلام کے بعد یہ دعا پڑھی جائے۔ اللھم انی استخرک بعلمک و اسئلک میں فضلک العظیم فانک تقدر والا اقدر واتعم ولا اعلم وانت علام الغیوب اللھم ان کنت تعلم ان ھذا الامر خیرلی ناقدرہ لی ویسرلی وان کنت تعلم ان ھذا لامرشرلی ناصرنہ عنی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے